صدارتی سیکرٹریٹ ، مظفرآباد

مظفرآباد ( )صدر آزاد جموں و کشمیر سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ وزیراعظم راجہ فاروق حیدر خان کی قیادت میں حکومت آزاد کشمیر کے خطہ کو ترقی دیکر اور عوام کو معاشی خوشحالی سے ہمکنار کر کے نہ صرف ریاست کو خود کفالت کی رہ پر ڈالنا چاہتی ہے بلکہ حکومت پاکستان کی مدد بھی کرنا چاہتی ہے۔ ہماری خواہش ہے کہ آزاد کشمیر کے عوام یہاں کے پرُ امن فضا اور بہتر تعلیم سے فائدہ اٹھا کر دنیا میں آزاد کشمیر اور پاکستان کا نام روشن کریں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کے روز محکمہ منصوبہ بندی و ترقیات کی طرف سے دی گئی ایک بریفنگ کے بعد اظہار خیال کرتے ہوئے کیا ۔ بریفنگ آزاد جموں کشمیر کے ایڈیشنل چیف سیکرٹری ترقیات ڈاکٹر سید آصف حسین نے دی ۔ صدر آزاد کشمیر نے کہا کہ ہمارے لیے یہ بات باعث فخر ہے کہ ہمارے نوجوان نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا بھر میں ڈاکٹرز ، انجینئرز اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کے ماہرین بن کر خدمات انجام دے رہے ہیں اور دنیا میں آزاد کشمیر کو ایک پرُ امن اور تعلیمی لحاظ سے سب سے آگے رہنے والے علاقے کے طور پر متعارف کرا رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہماری قومی ترقی کے ذمہ دار کئی محکمہ پاکستان میں اچھی شہرت رکھنے والے محکموں کی فہرست میں شامل ہیں جو ہمارے لیے ایک اور اعزاز ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اگریہ محکمے مذید دیانتداری اور قومی فرض شناسی کا مظاہرہ کریں تو آزاد علاقے میں بھی تعمیر و ترقی اور خوشحالی کا عمل تیزتر ہو سکتا ہے ۔ صدر آزاد کشمیر نے کہا کہ دنیا کے کئی ممالک پرائمری اورایلیمنٹری تعلیم اور سیر و سیاحت کی ترقی کے لیے مدد کرنے اور اُن شعبوں میں سرمایہ کاری کرنے کے خواہش مند ہیں جبکہ پاکستان کی موجودہ حکومت بھی سیر و سیاحت کے حوالے سے گہری دلچسپی رکھتی ہے ۔ صدر سردار مسعود خان نے کہا کہ کوہالہ اور مظفرآباد کے توانائی کے منصوبے اہم ضرور ہیں لیکن اس معاملے سے جڑے ماحولیاتی اور سماجی مسائل کو بھی کسی صورت نظر انداز نہیں کیا جا سکتا ۔ انہوں نے اس توقع کا اظہار کیا کہ آزاد کشمیر کی حکومت اور وفاقی حکومت کے ماہرین جلد مل بیٹھ کر ان مسائل کا کوئی نہ کوئی حل نکالنے میں کامیاب ہو جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ سالانہ ترقیاتی پروگرام اور منصوبہ بندی اور ترقیات کا محکمہ کسی بھی ریاست کا چہرہ ہوتا ہے اور ہمیں فخر ہے کہ ریاست کے اس اہم محکمہ کی قیادت ڈاکٹر سید آصف حسین جیسے قابل آفیسر کے ہاتھ میں ہے جو آزاد کشمیر کی تعمیر و ترقی کے لیے دن رات کام کر رہے ہیں ۔ صدر آزاد کشمیر نے ترقیاتی اہداف اور منصوبوں کے بارے میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری (ترقیات) کی بریفنگ پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوے کہا کہ موجودہ حکومت کے دور میں اداروں کو استحکام دینے کے ساتھ ساتھ سڑکوں کی تعمیر اور مواصلات کو ترقی دینے میں خصوصی توجہ دی گئی جس سے دور دراز علاقوں میں ترقی کا عمل تیز کرنے اور لوگوں کو بنیادی سہولیات بہم پہچانے میں مدد ملے گی ۔ قبل ازیں صدر آزاد کشمیر کو اہم ترقیاتی اہداف اور منصوبوں پر بریفنگ دیتے ہوئے ایڈیشنل چیف سیکرٹری (ترقیات ) نے بتایا کہ آزاد جموں و کشمیر سب سے کم تعلیمی سہولتوں کے باوجود شرح تعلیم میں سب سے آگے ہے اس وقت بھی درجنوں سکول اور کالجز بغیر عمارتوں کے چل رہے ہیں لیکن اس کے باوجود تعلیمی میدان میں شاندار کاکردگی سامنے آ رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ میں پچاس فیصد مواصلات کی ترقی پر خرچ کیا جا رہا ہے تاکہ سڑکوں اور شاہرات کے ذریعے دور دراز علاقوں کو نہ صرف شہروں سے ملایا جائے بلکہ آزاد کشمیر اور پاکستان کو ملانے والی شاہرات کو بھی جد ید سفری سہولیات سے آراستہ کر کے رسل و رسائل کو بہتر بنایا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں لنک روڈز کی تعمیر پرزیادہ توجہ دی گئی جبکہ موجودہ حکومت نے لنک روڈز کے بجائے بین ا لاضلاعی اور آزاد کشمیر کو پاکستان سے ملانے والی شاہرات کی تعمیر ، کشادگی اور بہتری کو ہداف بنایا تاکہ قومی وسائل کو درست سمت میں استعمال کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ شاہرات کی تعمیر کے بعد تعلیمی اداروں میں ضروری سہولیات کی فراہمی حکومت کی اہم ترجیحات میں شامل ہے جس کے لیے ضروری مالی وسائل فراہم کیے جا رہے ہیں۔ اس طرح آزاد کشمیر کے شہریوں کو بلا تعطل بجلی کی فراہمی کے لیے درکار سہولیات کی فوری فراہمی کو بھی یقینی بنایا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر کے تمام انتخابی حلقوں میں فی حلقہ5 کروڑ ترقیاتی فنڈز محکمہ لوکل گورنمنٹ و دیہی ترقی کے ذریعے خرچ کیے جا رہے ہیں تاکہ عوام کے چھوٹے چھوٹے لیکن ضروری مسائل فوری طور پر حل ہو سکیں ۔ اس کے ساتھ ساتھ حکومت نے لائن آف کنٹرول پر بھارتی فائرنگ سے متاثر ہونے والے انفراسٹرکچر کی تعمیر اور بحالی کے علاوہ صحت تعلیم ، سیاحت کی ترقی کے لیے نہایت اہم پیشرفت کی ۔ ایڈیشنل چیف سیکرٹری ترقیات نے صدر سردار مسعود خان کی طرف سے اہم وفاقی وزارتوں ، حکومت پاکستان کی اہم شخصیات اور عالمی اداروں کے ساتھ روابط قائم کرنے کے لیے حکومت کے منصوبہ بندی اور ترقیات کے محکمہ کی مدد کرنے پر اُن کا شکریہ بھی ادا کیا ۔

Download as PDF