07- 12- 2018 چکوٹھی اور حویلی سیکٹر کے ملحقہ علاقوں میں بھارتی فوج

اسلام آباد ( ) چکوٹھی اور حویلی سیکٹر کے ملحقہ علاقوں میں بھارتی فوج کی طرف سے آزاد کشمیر کے شہریوں پر بلا اشتعال فائرنگ اور سیز فائر معائدے کی خلاف ورزیوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے آزادجموں و کشمیر کے صدر سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ بے گناہ انسانوں کا قتل عام اور تباہی و بربادی بھارتی جمہوریت کا ٹریڈ مارک بن چکا ہے ۔ جمعہ کے روز اپنے ہی ایک خصوصی بیان صدر آزادکشمیر نے چکوٹھی کے پانڈو سیکٹر میں گزشتہ دو روز سے جاری فائرنگ اور ضلع حویلی کے فاروڈ کہوٹہ سیکٹر میں گولہ باری پر شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے بھارتی حکومت سے سیز فائر معائدے کی خلاف ورزیاں بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی فوج کی جانب سے لائن آف کنٹرول سے ملحقہ علاقوں میں بلا اشتعال فائرنگ اور گولہ باری سے آزادکشمیر کے شہری شدید مشکلات سے دو چار ہیں ۔ فائرنگ سے نہ صرف چکوٹھی کراسنگ پوائنٹ سے آرپار جاری تجارت معطل ہو چکی ہے بلکہ کئی علاقوں میں بچوں کا سکول جانا اور مریضوں کو ہسپتال تک پہنچانا بھی ممکن نہیں رہا ۔ انہوں نے بین الاقوامی برادری سے اپیل کی کہ وہ بھارت کی جارحانہ کاروائیوں کا فوری نوٹس لیتے ہوئے بھارتی فوج کی اشتعال انگیزی بند کرائے ۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی فوج ایک جانب مقبوضہ جموں و کشمیر میں آزادی اور حق خود ارادیت کے حصول کے لیے جاری تحریک کو طاقت کے ذریعے کچلنے کے لیے ظالمانہ کاروائیوں میں مصروف ہے اور دوسری جانب کشمیر کی تحریک آزادی کی حمایت کرنے کے جرم میں آزاد کشمیر کے شہریوں کو سزا دینے پر تلی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی حکومت کو جان لینا چاہیے کہ بھارت طاقت کے بل بوتے پر کشمیریوں کی جدوجہد کو ختم کر سکتا ہے اور نہ ہی آزاد کشمیر کے عوام کو ڈرا دھمکا کر مقبوضہ کشمیر میں اپنے بھائیوں کے حق میں اپنی آواز بلند کرنے سے باز رکھ سکتی ہے ۔ صدر سردار مسعود خان نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اقوام متحدہ کے فوجی مبصرین کی لائن آف کنٹرول پر کشیدگی کے حوالے سے رپورٹس کی روشنی میں بھارت کی طرف سے لائن آف کنٹرول پر سیز فائر کی خلاف ورزیوں کا نوٹس لیں ۔ صدر آزاد کشمیر نے مقبوضہ جموں و کشمیر میں تحریک آزادی کے ایک اہم رہنما شبیر احمد شاہ کی بھارت کے بدنام زمانہ تہاڑ جیل میں مسلسل نظر بندی اور گرتی ہوئی صحت پر شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ان کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ سید بشیر احمد شاہ پہلے ہی اپنی زندگی کے اکتیس سال جیل میں گزار چکے ہیں۔ صدر سردار مسعود خان نے مقبوضہ جموں و کشمیر میں تحریک آزادی کے رہنما حلال احمد وار اور کشمیر اکنامکس الائنس کے شریک چیئرمین فاروق احمد ڈار کی سرینگر میں ان کی رہائش گاہوں پر چھاپے مارنے اور دونوں رہنماؤں کو گرفتار کرنے کی بھی شدید مذمت کی ۔

Download as PDF