Birmingham: President AJK Barrister Sultan Mahmood Chaudhry addressing a function of newly elected Kashmir Councilors in Birmingham.

۔

برمنگھم، برسلز، اینٹورپن ( )13 جون2022ء

صدر آزاد جموں وکشمیر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے کہا ہے کہ برطانیہ میں مختلف سٹی کونسلز میں آپ لوگوں نے مسئلہ کشمیر، مقبوضہ کشمیر اور یاسین ملک کی سزا کے خلاف قرار دادیں پاس کرائی ہیں اور آج ایک مرتبہ پھر اس امر کی ضرورت ہے کہ آپ لوگ متحد ہو جائیں اور یہاں پر میری موجودگی میں آل پارٹیز کشمیر کمیٹی کا قیام عمل میں لائیں۔ مسئلہ کشمیر اس وقت ایک فیصلہ کن موڑ میں داخل ہو چکا ہے لہذا آپ لوگ تمام سیاسی و سماجی وابستگیوں سے بالا تر ہو کر مسئلہ کشمیر اور مقبوضہ کشمیر کی آزادی کے نقطہ پر متحد اور متفق ہو جائیں اور یہاں برطانیہ میں ہر فورم پر ڈیڑھ کروڑ کشمیریوں کی آواز پہنچانے کے لیے اپنا کردار ادا کریں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج یہاں برمنگھم میں برطانیہ کے نو منتخب کشمیری نژاد کونسلرز کی ایک بڑی تعداد سے ایک تقریب میں بطور مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر تقریب میں لیڈز کے سابق لارڈ میئر اصغر قریشی، ڈپٹی میئر برمنگھم شفیق شاہ، کیبنٹ ممبر برمنگھم کونسلر ماجد، سابق میئر ورکسیسٹر چوہدری اللہ دتہ، کونسلر طارق محمود، کونسلر عثمان علی، کونسلر صداقت معصوم، کونسلر جوہر خان، کونسلر خواجہ سعود، کونسلر اسحاق حسین، کونسلر ایوب خان، کونسلر امجد، کونسلر خواجہ وقاص، کونسلر احمد، کونسلر ذاکر چوہدری، کونسلر محمد عمران، کونسلر عارف، کونسلر رفیق، کونسلر محمد اکرام اور دیگر بھی شریک تھے۔ اس موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے برطانیہ کے نو منتخب کونسلرز نے بیرسٹر سلطان محمود چوہدری کی مسئلہ کشمیر کو عالمی سطح پر اجاگر کرنے کی کوششوں کو سراہا اور اس بات کا یقین دلایا کہ ہم آپ کی مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کی کوششوں میں ہر ممکن طرح سے آپ کا ساتھ دیں گے اور ہم آج اس بات کا اعلان کرتے ہیں کہ جلد ہی نو منتخب کونسلرز کی آل پارٹیز کشمیر کمیٹی تشکیل دے دی جائے گی۔ بعد ازاں صدر آزاد جموں وکشمیر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری برمنگھم سے بیلجیئم کے دارالحکومت برسلز روانا ہو گئے۔ برسلز ایئرپورٹ پہنچنے پر صدر آزاد جموں وکشمیر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری کا پرتپاک استقبال کیا گیا، انہیں پھولوں کے ہار پہنچائے گئے، انہیں گلدستے پیش کیے گئے اور ان پر پھولوں کی پتیاں نچاور کی گئیں۔ بعد ازاں صدر آزاد جموں وکشمیر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری برسلز سے بیلجیئم کے شہر اینٹورپن روانہ ہو گئے جہاں پر چوہدری کاشف لطیف نے ان کے اعزاز میں استقبالیہ دیا۔ اس موقع پر استقبالیہ سے خطاب کرتے ہوئے صدر آزاد جموں وکشمیر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے کہا کہ بیلجیئم ایک اہم ملک ہے اور یہ یورپی یونین کا دارالحکومت ہے۔ یہاں پر نیٹو اور انسانی حقوق کے اداروں سمیت دیگر اہم اداروں کے دفاتر بھی ہیں اور ویسے بھی یورپی یونین اور یورپی پارلیمنٹ سے ہم کشمیریوں کو بڑی توقعات ہیں اور ہم امید رکھتے ہیں کہ یورپی یونین اور یورپی پارلیمنٹ مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے اور مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالی بند کروانے کے لیے اپنا کردار ادا کریں گے۔ اس سے قبل بھی یورپی پارلیمنٹ نے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالی اور گم نام قبروں کی دریافت پر ایماء نکلسن رپورٹ پاس کر رکھی ہے۔ میں یہاں پر مقیم کشمیریوں سے کہوں گا کہ وہ مسئلہ کشمیر کو عالمی سطح پر جار حانہ انداز میں اٹھانے کے لیے اپنا رول ادا کریں اور دنیا کے ایوانوں تک مقبوضہ کشمیر کے عوام کی آواز بلند کرنے کے لیے اپنا کردار بھرپور انداز میں ادا کریں۔ اس موقع پر استقبالیہ سے کشمیر پیس فورم انٹرنیشنل بیلجیئم کے صدر چوہدری نصیر احمد، چوہدری کاشف لطیف، چوہدری خلیل، کشمیر پیس فورم انٹرنیشنل ہالینڈ کے صدر راجہ ذیب خان، پرویز ملک، پرویز لوسر، پیپلز پارٹی بیلجیئم کے صدر ملک اجمل، پی ٹی آئی بیلجیئم کے صدر ناصر نہرا، ڈاکٹر اسحاق مقصود طاہری، مشتاق دیوان اور دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا۔ اس موقع پر استقبالیہ تقریب میں سینکڑوں کی تعداد میں کشمیریوں اور پاکستانیوں نے شرکت کی۔

٭٭٭٭

Download as PDF